کیل مہاسوں اور چھائیوں 93

کیل مہاسوں اور چھائیوں سے کیسے بچا جائے

کیل مہاسوں اور چھائیوں کا دیسی علاج بتانے سے پہلے آپ کو اس کے بارے میں‌تھوڑا سا وضاحت سے بتا دینا زیادہ بہتر رہے گا کہ یہ کیوں‌، کب اور کیسے ہوتے ہیں، مرحلہ وار دیکھا جائے تو پہلا مرحلہ بلوغت كے آغاز ہی سے یعنی لڑکے ، لڑکیوں میں 14 سے لے کر 20 سال تک کی عمر میں کیل مہاسے کا آغاز ہوتا ہے ، جب کہہ دوسرے مرحلے میں ، 30 سال کی خواتین اِس کا شکار ہو سکتی ہیں .

کیل مہاسے کی اصل وجوہات

اِس کی اہم وجہ خواتین میں ہارمون کی تبدیلی ہے . کیل مہاسوں کو نظر انداز کرنے كے بجائے ان کا علاج ضروری ہے ، جو کسی ماہر امراض جلد ہی سے کروانا چاہیے اور ٹوٹکو وغیرہ سے بچنا چاہیے . ماہرین کم سے کم تِین ماہ میڈیسن استعمال کراتے ہیں جن سے کیل مہاسوں سے مکمل نجات مل جاتی ہے .

جلد کو نقصان اور فائدہ پہنچانے والی غزائیں

نا مناسب غزا اور نوجوان لڑکیوں میں ڈائیٹنگ کا بڑھتا ہوا رحجان ، جلد کو سخت نقصان پہنچانے کا باعث بنتا ہے . خوراک میں وٹامن A ، جلد كے ٹشوز“ کی مرمت کرتا ہے . وٹامن بی ، جلد میں خون کی گردش کا بہاؤ بہتر بناتا ہے اور وٹامن بی3 ، رنگت کی بہتری كے لیے ضروری ہے . باؤٹین ، زینک اور سیلینیوم کا درست استعمال بھی چہرے کی دِلکشی اور گھنے بالوں كے لیے نہایت اہم ہے . وٹامن سی اور ای ، دھوپ سے ہونے والے مضر اثرات سے بچاتی ہیں اور جلدی پروٹین کولاگین اور ایلاسٹین کی مقدار میں اضافہ کرتے ہیں . اسی طرح کم چکنائی ( فیٹ ) والا دودھ ، دہی سبزیاں اور موسمی پھلوں کا استعمال ، خشک میوہ جات ( ڈرائی فروٹس ) کھانے سے بھی جلد نرم ملائم ، شاداب اور دلکش ہوجاتی ہے .

سن بلاک کا استعمال جلد كے لیے مفید ہے

سن بلاک کا استعمال جلد کی صحت كے لیے نہایت مفید ہے بہتر ہو گا کہہ اسے زندگی کا لازمی حصہ بنا لیا جائے اور کوشش یہی ہونی چاہیے کہہ سن بلاک ماہر امراض جلد کا تجویز کردہ ہو . سردیوں میں اِس كے علاوہ مرطوب آب ہوا والے علاقوں میں جلد اسی طرح متاثر ہوتی ہے ، جیسا کہہ گرمیوں میں شدید دھوپ سے . پہاڑی اور خشک علاقوں كے رہایشیوں کو اپنی جلد کا خاص خیال رکھنا چاہیے کہہ سردیوں میں ان کی جلد زیادہ متاثر ہوتی ہے . موسم كے اثرات كے علاوہ دوسری اہم وجہ یہ بھی ہے کہہ اِس موسم میں پانی کم پیا جاتا ہے ، جب کہہ گرم مشروبات مثلاً چائے ، کافی کا استعمال زیادہ ہوتا ہے . یہ مشروبات جسم سے پانی کی مقدار کم کر دیتے ہیں ، جس سے جلد خشک اور سیاہ پڑنے لگتی ہے . سردیوں میں اگر موسمی پھلوں ، خاص طور پر کینو ( اورنج ) ، سنگترے اور اسٹرابری کا استعمال بڑھا دیا جائے ، تو یہ جلد کی صحت كے لیے نہایت فائدہ مند ہیں ، کیوں کہہ یہ وٹامن سی اور پانی کی بھاری مقدار سے لبریز ہوتے ہیں .

5 ، 6 کریم ملا کر استعمال کرنا صحت کی لیے نقصان دہ ہے

اکثر خواتین رنگ گورا کرنے کی لیے 5 ، 6 کریم ملا کر استعمال کرتی ہیں . رنگ گورا کرنے كے لیے اختیار کیا جانے والا یہ طریقہ جس میں مرکری کی زیادہ مقدار ہوتی ہے ، جلد کو پتلہ کر دیتا ہے ، مساموں کا کھل جانا ، پتلی پتلی نسوں کا ابھر آنا اور پیپ دَار دانوں کا ظاہر ہونا ، اسی كے سبب ہے . یاد رکھیں ، غیر معیاری اور سستی کریمز کو ملا کر استعمال کرنا ، چہرے کی صحت كے لیے سخت نقصان دہ ہے . اِس سے بچنا بے حد ضروری ہے یہ اگر ایک بار چہرے پر داغ دھبے پر جائیں تو نشانات کا ختم ہونا مشکل ہوجاتا ہے . اسی طرح نچلی تہ کا پتلہ ہونا نقصان دہ ہے ، کیوں کہہ اِس سے اندرونی جلدی پروٹین تباہ ہو جاتے ہیں . یاد رہے کہہ جلد کی صحت حُسْن كے لیے نچلی جلد کا موٹا یا صحت مند ہونا بے حد ضروری ہے .

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کیا کہتے ہیں؟