شجرکاری کی زندگی میں اہمیت 571

شجرکاری کی زندگی میں اہمیت

درخت انسان كے دوست ہیں اور درخت لگانا شجر کاری کہلاتا ہے . شجرکاری نا صرف سنت رسول ﷺ ہے بلکہ ماحول کو خوبصورت اور دلکش بنانے میں بھی اہم کردار ادا کرتی ہے . جہاں درخت دنیا كے جانداروں کو چھاؤں فراہم کرتے ہیں وہاں ان کی خوشبوسے زمانہ مہکتا ہے۔
رنگ بارنگی درخت کبھی ریجیستان کو نخلستان میں بدلتے ہیں تو کبھی جنگل میں منگل کا سامان پیدا کرتے ہیں . درختوں پر بسنے والے پرندوں کی چہچاحاٹ پر فضا ماحول میں رس غول دیتی ہے .
درختوں سے انسان کو بہت سے فوائد بھی حاصل ہوتے ہیں . یہ فائدے معاشی بھی ہیں اورمعاشرتی بھی اگر ہم معاشی فوائد کا ذکر کریں تو درختوں سے حاصل ہونے والی لکڑی انسان كے بہت کام آتی ہے . کبھی یہ فرنیچر بنانے كے لیے استعمال ہوتی ہے تو کبھی جلانے كے لیے . کبھی اِس کی شاخیں جانوروں كے چارے كے طور پر استعمال ہوتی ہیں تو کبھی اِس كے سوکھے پتے کھاد بنانے میں استعمال ہوتے ہیں . پھلوں کا حصول ہو یا بچوں كے کھلینے کا میدان ہر جگہ درخت ہی انسان كے کام آتے ہیں .

درختوں سے انسان کثیر زَر مبادلہ بھی کماتا ہے . اچھے معاشرے میں درختوں کی بہت قدر و قیمت ہوتی ہے یہ تعلیمی اور تحقیقی مقاصد كے لیے بھی استعمال ہوتے ہیں اور ادویات کی تیاری میں بھی .
شجر کاری کی اہمیت:

درخت زندگی كے زمان ہیں اِس لیے شجر کاری کی اہمیت بہت ذیادہ بڑھ جاتی ہے . بہت سے جانور سبزی خور ہوتے ہیں ان سبزی خور جانوروں کو انسان اور دیگر جاندار کھاتے ہیں اِس طرح درخت اور پودون كے ذریعے خوراک کی ایک زنجیر وجود میں آتی ہے . اِس كے علاوہ انسان ہوں یا جانور سبھی کو زندہ رہنے كے لیے آکْسِیْجَن کی ضرورت ہوتی ہے یہ آکْسِیْجَن درختوں اور پودون كے سوا اور کہیں سے نہیں ملتی . اِس لیے ہم کہہ سکتے ہیں کہ جب سے انسان نے دنیا میں آنْکھ خولی ہے درخت اِس کی اہم ترین زاروریات میں شامل رہے ہیں . آج ہمارے پاس درخت کم ہوتے جا رہے ہیں اِس لیے ضرورت اِس امر کی ہے کہ ذیادہ سے ذیادہ درخت لگاے جائیں تاکہ زندگی اسی طرح رواں دواں رہے .

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کیا کہتے ہیں؟

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.